Call Us

+92(309)427-3811

Donate Now

MILAD MANANY KA SAHIH TARIQA میلاد منانے کا طریقہ

  • Home
  • MILAD MANANY KA SAHIH TARIQA میلاد منانے کا طریقہ
26 Nov

MILAD MANANY KA SAHIH TARIQA میلاد منانے کا طریقہ

20191122 MILAD MANANY KA SAHIH TARIQA میلاد منانے کا صحیح طریقہ ہم نے اپنے نبی کو بشارت دینے والا بنا کر بھیجا ہم نے اپنے نبی کو ڈر سنانے والا بنا کر ہم نے اپنے نبی کو بشارت دینے والا بنا کر بھیجا ہم نے اپنے نبی کو ڈر سنانے والا بنا کر بھیجا سرکار جنت کی بشارت دیتے ہیں اس سے حضور صلی اللہ علیہ وسلم بیٹھے تھے تشریف فرما تھے آپ نے فرمایا جبرائیل امین آئے اور میرا ہاتھ پکڑا اور مجھے کہا یا رسول اللہ یہ جنت کا وہ دروازہ ہے جس میں آپ اور آپ کے امتی جنت میں جائیں گے جب یہ بات سرکار صلی اللہ علیہ وسلم نے اصحاب کو بتائی تو کہا یا رسول اللہ اگر میں آپ کے ساتھ ہوتا تو کتنا مزہ آتا تو فرمایا صدیق تو میرے ساتھ سب سے پہلے ہوگا یہ بشارتیں ہیں ایک موقع پر تشریف فرما ہیں حضور نے جنت کی بشارت دی تو صحابی نے کہا حضور میں فرمایا تو بھی میرے ساتھ ہو اور اٹھ کر کہنے لگا حضور ہم کہا نہیں یہ پہل کر گئے ابھی ان کو حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے بشارت عطا فرمائی کہ حوض کوثر پر آئیں گے اور میں ان کو اپنے حوض پانی پلا پل صراط سے ان کو گزاروں گا جب حشر کا میدان ہو گا نہ ہی تمہیں تمہاری اللہ کی بارگاہ میں سفارش کر کے تمہیں مقام دلواؤں گا تو یہ کیا ہے یہ بشارتیں ہیں آگے سرکار نظیر بھی ہیں ڈر بھی سناتے آج امت ایک چیز کو لے کر بیٹھ گئی ہے بشارت کو لے کر بیٹھی ایسے مفت کی ٹکٹیں سارے لگوانے کو تیار ہیں اگر سرکار بشیر ہیں تو نذیر بھی ہیں فاطمۃ الزہرہ سلام اللہ علیہا کا حضور نے فرمایا تھا فاطمہ یاد رکھ کہ تو میری بیٹی ضرور ہے لیکن قبر میں اور حشر میں عمل کام آئیں گے یہ نظیر ہے سرکار ڈرا رہے ہیں قبر سے ڈرا رہے ہیں حسر سے ڈرا رہے ہیں امتحان سے ڈرا رہے آپ کی نبوت میں سے ایک حصہ لینا اچھی بات نہیں ہے کسی نے ایک حصہ لے لیا اس ڈر سنا سنا سنا سنا سنا کے وہ ادھر لے گئے کچھ نے ایک حصہ لے لیا بشارتیں سنا سنا سنا کہ نمازی سے فارغ کردیا بندوں کو جس نے گناہ کیا زنا کیا بارگاہ میں حاضر ہوا حضور مجھ سے گناہ ہوا ہے آپ نے اس کو سنگسار کیا پتھر مارے یہ سرکار نذیر ہیں آپ کے سامنے کسی نے شراب پی پتہ چلا شراب پی گئی اس نے تسلیم کیا میں نے شراب پی آپ نے کوڑے لگوائے اس کو اسی کوڑے لگوائے گئے کچھ لوگوں میں یہ ہوتا ہے کہ جی ہم تو ساری زندگی سنتے آئے ہیں ساری زندگی سنتے آئے ہیں کہ جی بخشش میلاد منایا اور بخشش ہوگئی نام لیا اور جنت میں پہنچ گئے تو کیا صحابہ سے بڑا نام لیوا کوئی تھا نام لے کے چپ کر کے گھر بیٹھ جاتے آپ کو ایک مثال آتا ہوں ایک عورت مرید ہے بی بی میری گھر والی نے اس سے پوچھا کتنا عرصہ ہوگیا تو آتی نہیں ہے اب تو کیا مسئلہ ہے اس نے کہا میری مریدی قائم ہے میں نے کہا وہ کیسے اس نے کہا میں ماہانہ محفل پر جب عورتیں آتی ہے نا تو میں دودھ کی بوتل تحفہ کر دیتی ہوں ہاں پھر تو سارے دودھ کی بوتل ایک دودھ کی بوتل کوئی چائے کی پیالی لے آئے کوئی چائے کی چائنہ کے لے آئے کوئی مسلہ بھیج دے کوئی جناب دستار بھیج دے کوئی کپڑے بھیجیں ساری ان کی مریدی کیا ہمیں سیکھنے کی کیا ضرورت ہے بھائی آج ہم میلاد کر افسوس کے ساتھ کہتا ہوں دوسری طرف بھی زبردست غلو کیا جاتا ہے ہماری طرف بھی رعایت نہیں دی جاتی میلاد پاک منا کر محفل منا کر ٹھیک ہے ہماری بخشش کا ذریعہ ہے لیکن یہاں کہاں ثابت ہے کہ آپ نماز چھوڑ دیں کہاں یہ لکھا ہوا کہ آپ داڑھی شریف نہیں رکھیں گے کہاں یہ لکھا ہوا ہے کہ آپ خود قرآن نہیں پڑھیں گے بچوں کو قرآن نہیں پڑھائیں گے عاشق تو وہ ہوتا ہے جو محبوب کی ہر ادا پر کٹنے کے لیے مرنے کے لیے تیار ہوتا ہے ساری زندگی عشق کے دعوے کی میں مثال دیتا ہوں شراب کی بوتل ہو اس کے اوپر لیبل شہد کا لگا دے یا دودھ کا لگا دے تو اندر دودھ بن جائے گا شہد اندر بن جائے گا جو شراب ہے لیبل لگانے سے نہیں بدلے گی بھائی اسی طرح جوش اندر جو چیز ہو گی باہر لیبل وہی ہوگا تو پھر بات بن جائے گی ہمارا لیبل تو ہو عاشق رسول اور عمل سے ہمارے ثابت نہ ہو لیبل تو ہم جو ہیں نا غلام ہیں سرکار کے غلام یہ رسول میں موت قبول ہے لیکن نماز قبول نہیں ہے داڑھی قبول نہیں ہے دین قبول نہیں ہے حضور کی شریعت قبول نہیں ہے پھر کیسے غلامی رسول میں موت قبول ہے